*میرا وضو اتنا کچا نھیں کہ*

*تحریر: ابو فروا*
میں ایک پکا مسلمان ہوں میرا وضو اتنا کچا نھیں کہ وہ جھوٹ بولنے، غیبت کرنے ، کسی پہ بہتان لگانے سے ٹوٹ جائے۔
میرا وضو اتنا کچا نھیں ہوتا جو اشیاء میں ملاوٹ کرنے، دھوکا دینے، تجارت میں 
بے ایمانی کرنے، رشوت لینے سے ٹوٹ جائے،
میرا وضو اتنا کچا نھیں کہ وہ رزق حرام کمانے سے ٹوٹ جائے، 
میں سارا دن اپنی دکان پر 2نمبر اشیاء فروخت کرتا ہوں لیکن ایک ہی وضو سے تین نمازیں پڑھتا ہوں الحمداللہ میرا وضو اتنا کچا نھیں کہ وہ گاہک کو دھوکا دینے سے ٹوٹ جائے۔
ہم مسلمانوں کے وضو بہت پکے ہوتے ہیں ہمارے وضو پر کوئی آنچ بھی نھیں آتی 
چاہے سارا دن نامحرم سے پیار بھری باتیں کریں۔
فلم یا ڈارمے دیکھیں،
چغل خوریاں کریں یا حرام کاریوں میں دن گزاریں۔
ہمارے وضو تو ،، ڈیٹ،، پہ جانے سے بھی نھیں ٹوٹتے ۔
اتنے شاندار اور مضبوط وضو ہوتے ہیں جن پر نہ تو تکبر میں آنے سے فرق پڑتا ہے نہ کسی کو ذلیل کرنے سے وضو پر کوئی شک پڑتا ہے۔ 
جب ہم وضو بناتے ہیں تو جب چاہیں اپنے رب کے آگے سجدہ کر لیتے ہیں نماز ادا کرنے اور اپنے عہد عبودیت کو اپنے رب کے سامنے دوہرانے میں ہمیں کوئی پریشانی کبھی نھیں ہوتی نہ کسی بھی برے عمل سے ہمیں اپنے وضو پر کبھی شک پیدا ہوتا ہے۔
کیونکہ ہمارا وضو اتنا کچا نھیں ہوتا۔
ہمارا وضو صرف اس وقت ٹوٹتا ہے جب بول و براز یا ریح کا اخراج ہو۔
ہم ،،زندہ،، مسلم ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔ 
ابو فروا۔
Share To:

Post A Comment:

0 comments so far,add yours